Breaking News
Home / قبض / دائمی قبض ہے

دائمی قبض ہے

مجھے دائمی قبض کی شکایت ہے۔ میں دیسی گھی‘ milk‘ امرود سب استعمال کرچکی ہوں، کوئی فرق نہیں پڑتا۔ میری ٹانگوں میں اس قدر درد ہوتا ہے کہ چل پھر نہیں سکتی۔ آپ اس کی دوائی بتائیے۔ میرے والد سل کے مریض ہیں۔ جب وہ سو کر اٹھتے ہیں تو ان کی ایڑیوں میں درد ہوتا ہے۔ پاﺅں زمین پر نہیں لگتے۔ doctorوں کی دوائی سے کوئی آرام نہیں آیا۔(روبی‘ ساہیوا ل)
جواب: دائمی قبض کیلئے آپ تازہ سبزیاں کچی اور پکی کھائیے۔ بغیر چھنے آٹے کی روٹی کھائیے۔ آلو بخارا کے موسم میںصبح نہار منہ اس کا breakfast کیجئے۔ مغرب کے وقت کھانا کھائیے اور رات دس بجے کے بعد ایک tea spoon زیتون کا تیل milk میں ملا کر پیجئے۔ اس کے بعد اور کچھ نہیں کھانا۔ آج کل بند گوبھی مل جاتی ہے۔ گوشت(meat) میں یا سادہ گوبھی کی بھجیا بنا کر کھائیے۔ بند گوبھی کے پتے سلاد میں شامل کر سکتی ہیں۔ دوائی کی بجائے آپ غذا اور پھلوں پر زور دیجئے۔ ہری سبزیاں آپ کیلئےمفید ہیں۔ ہرڑ کا مربہ مل جائے تو قبض کیلئے وہ بھیمفید ہے‘ منقیٰ کے بیج (seeds)نکال کر 20دانے آدھ پیالی پانی(water) میں بھگو دیجئے۔ صبح اٹھ کر کھائیے۔ اس سے بھی دیرینہ قبض کی شکایت دور ہوتی ہے۔ والد صاحب کیلئے میرا مشورہ تو یہ ہے کہ آپ ساہیوال میں کسی اچھے doctor کو دکھا کر دوائی لیجئے۔ ان کی علامت ایسی ہے کہ وہ دوائی سے ٹھیک ہو سکتے ہیں۔ پانی(water) زیادہ سے زیادہ آپ بھی پیجئے اور والد صاحب کو بھی پلائیے۔ اس سے benefit ہو گا۔ یورک ایسڈ کی وجہ سے بھی یہ درد ہو جاتا ہے۔

About admin

Check Also

احتلام و قبض کا مفت علاج

احتلام و قبض کا مفت علاج:آج میں ایک ایسا نسخہ بتارہا ہوں کہ جس کے ...

One comment

  1. MUJHAY AKSAR QABZ KI SHKAYAT REHTI HAY AUR JAB BHE QABAZ HOTI HAY TO SATH HE KAMAR MAIN BHI DARD SHOROO HO GATI HAY AUR DARD AISI HOTI HAY KAY SEDHA CHALNA BHI MUSHKIL HO JATA HAY DOCTORS KO KEHTA HOON TO WO KAHTAY HAIN KAMAR DARD KA QABZ KAY SATH KOI TALUK NAHIN HAY MUJHAY GUZISHTA CHAND SALOON SAY YAH MASLA HAY HAY HAMAISHA QABZ KAY SATH KAMAR DARD HOTA HAY CHAND DIN QABZ REHNAY KAY BAD JUB PAIT SAAF HOTA HAY TO DARK BROUN COLOUR KA PAKHANA KHARIG HOTA HAY US KAY BAD KAMR DARD BHI THEEK HO JATA HAYA

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *